اف یہ بچپن۔ 

رات کے دو بج رہے ہیں۔ میں اپنی بہن اور دونوں بھانجیوں کو یاد کر رہی ہوں۔ 

رائٹر میں بچپن سے تھی۔ ایسے ایسے معرکۃالآراء شعر کہے کہ بس پانیوں پر آگ لگتے لگتے رہ گئی۔ 

ماضی کی بھول بھلیوں میں گھومتے اک قطعہ یاد آیا۔ 

جس کو مجھ سے زیادہ میری بہن نے پبلک کیا اور شہرت کے دوام تک پہنچایا۔

آپ بھی سنیے۔ عرض کیا ہے۔ ۔ 

کتنی خوشی ہوتی ہے

جب گھر میں کوئی آتا ہے۔ 

تھوڑی دیر بیٹھتا ہے وہ

کھانا کھا کے جاتا ہے۔ 

شاعرہ؛سیدہ تحریم فاطمہ۔ 

آداب۔ ۔ ۔ 

فن کا اوج کمال دیکھیے۔ اور راقم کی آبزرویشن کی باریکیوں کی داد دیجیے۔ 

شکریہ

Advertisements

9 Replies to “اف یہ بچپن۔ ”

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s