سناٹا

کبھی کبھی جب ارد گرد قہقہے اور رنگ بکھرتے ہیں تو میرے اندر سناٹا اترتا ہے تحریم۔ ۔ ۔ آپ بتایئں میں کیا کروں؟ 

وہ میرے سامنے بیٹھی تھی۔ نظریں جھکائے، دونوں ہاتھ اپنی گود میں سمیٹے۔ چہرے کے تاثرات پر سکون رکھنے کی حتی الامکان کوشش کرتے ہوئے۔ 

میں نے مسکرا کر اسے دیکھا۔ اپنا ہاتھ بڑھا یا ۔ اس کی کانچ آنکھوں میں حیرت اتری ۔جھجک کر اس نے میرا ہاتھ تھام لیا۔

کبھی کبھی جب کسی ان دیکھے بوجھ سے کندھے دکھنے لگیں تو وہ بوجھ اتار کے رکھ دینا چاہیے۔ جو تم نہیں اٹھا سکتیں اس کے پیچھے جان مت دو۔ سیدھے سبھاؤ مان لو کہ اس سے کندھے ٹوٹ جائیں گے۔ اللہّ جب ستر ماؤں سے زیادہ چاہتا ہے تو برداشت سے زیادہ بوجھ بھی نہیں ڈالتا

حضرت داؤدؑ کو بھی اللہ نے آزمائش میں ڈالا تھا۔ جب وہ اتنے بیمار پڑے کہ ان کے جسم میں کیڑے پڑ گئے۔ اک دن ان کے زخم سے دو کیڑے گر گئے تو انھوں نے ان کو اٹھا کے واپس زخم میں رکھ لیا کہ جب تک غذا ہے یہیں رہو۔

پھر کیا ہوا؟

ان کیڑوں نے ایسا کاٹا جیسا پہلے کبھی اتنا تکلیف دہ زخم نہیں ہوا تھا۔

اللہ نے فرمایا: جب ہم نے تمھیں آسانی عطا فرمائی تو تم نےاپنے لئے تکلیف سہتے رہنا کیوں پسند کیا؟

یوں حضرت داؤدؑ نے توبہ کی اور شکر ادا کیا۔

تو اپنے لئے بھی آسانی کا رستہ چنو اور اپناؤ۔

میں نے نرمی سے اپنی بات مکمل کی۔ مگر اضطراب اسکی آنکھوں سے چھلکتا تھا۔

آپ اپنے فیصلوں  میں بہت مضبوط ہیں تحریم۔ میں نہیں ہوں۔اس نے میرے ہاتھوں پر اپنی گرفت مضبوط کی

کوئی نہیں جانتا ان جنگوں کے بارے میں جو آپ نے اکیلے لڑی ہوں۔وہ آنسو جنھوں نے سجدے کی جگہ بھگو دی ہو۔ اور شکر ہے آنسو بے رنگ ہوتے ہیں۔ ورنہ تکیہ ہر صبح راز فاش کردیتا۔ 

میں نے دل میں سوچا۔ کہا تو بس اتنا کہ۔ ۔ ۔ 

ان سناٹوں سے لڑو گی تو تھک جاؤگی۔ اک دن اپنے اللہ کے سامنے ٹوٹ جاؤ۔ سارے فیصلے آسان ہو جائیں گے۔ کبھی کبھی خوشی کی طرح غم کو بھی منا لینا چاہیے۔

میں نے اپنابازواس کےکندھے کےگردلپیٹا۔ اس کے آنسو ٹپک رہے تھے۔ میں جانتی تھی۔ مگر حقیقت یہ ہے کہ آنسو بہا لینا آسان ہےاور فیصلوں پر  ڈٹ جانا مشکل۔ آنسو بہانے والے کبھی بھی مشکل فیصلے نہیں  کر سکتے۔ اور وہ نہیں جانتی تھی مجھے آنسو بہانے سے نفرت ہے۔

کیا جنگ میں لڑنے والے اور ان کے  پیچھے رونے والے کبھی برابر ہوسکتے ہیں؟

Advertisements

9 Replies to “سناٹا”

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s