کہ اب مجھے شوقِ کمال نہیں , خوفِ زوال نہی

کہا ابراہیم نے اے میرے باپ ! بے شک مجھے خوف ہے کہ تم پر رب کا عذاب آئے, پھر شیطان کے ساتھی ہو جاؤ. باپ نے کہا,ابراہیم  کیا تو میرے معبودوں سے پھر گیا ہے.البتہ اگر تو باز نہ آیا تو میں تجھے سنگسار کر دوں گا.پس تو ہمیشہ کے لئے مجھ سے الگ ہو جا.کہا ابراہیم نے سلام ہے آپ کو. میں اپنے رب سے دعا کرونگا کہ آپ کو معاف کردے.بے شک وہ مجھ پر بڑا مہربان ہے.اورمیں آپ لوگوں کو بھی چھوڑتا ہوں اور جنھیں آپ میرے رب کے سوا پکارتے ہیں.اور میں اپنے رب کو ہی پکارونگا اور امید ہے میں اپنے رب کو پکار کر نامرادنہ رہونگا.

اور پھر جب ان سے علیحدہ ہوا اور اس چیز سے جسے وہ رب کےسوا پوجتےتھے.ہم نے اسے اسحق اور یعقوب جیسی اولاد دی.اور ہم نے ہر اک کو نبی بنایا اورہم نے ان سب کو اپنی رحمت سے حصہ دیا اورہم نےان کے لئے “لسان الصدق” (سچی ناموری) بنائی..

(سورہ مریم)


جب لوگ ہمارے بارے میں بات کرتے ہیں تو بہت تکلیف ہوتی ہے. لگتا ہے,ہماری عزت خراب ہو گئی ہے. ہم دوبارہ سر اٹھا کے نہیں جی سکیں گے. ہمارا خاندان ہمیں رسوا کر دے گا. ہمارا خاندان ہمیں رسوا کردے تو لگتا ہے ساری زندگی ہی ختم ہو گئی ہے. بدکاری کی سزا سنگسار کرنا ہے.یہ ایک توہین آمیز سزا ہوتی ہے.ایک زمانے میں ابراہیم علیہ السلام کو ان کے والد نے یہی سزا سنائی تھی.ان کی عزت ختم کرنے کے لئے کیونکہ ان کے لوگ ان کے بارے میں باتیں کر رہے تھے کہ ان کے بتوں کو زمیں بوس کرنے والا ہے اک نوجوان… کہتے ہیں جسے ابراہیم..وہ سچے تھے مگر زمانے بھر نے ان کے خلاف باتیں کیں  ان کو تنہا کردیا .ان کی عزت ختم ہو کر رہ گئی. ان کو گھر سے نکال دیا.جب آگ میں نہ جلا سکے تو  ملک سے نکال دیا..

پھر کیا ہوا

پھر یہ ہوا کہ ابراہیم علیہ السلام کو خداوند نےاسحق بھی دیا  اور یعقوب بھی.ان کو کعبہ بنانے کا شرف بھی دیااور ان کو رہتی دنیا تک ہماری نمازوں اور ہمارے درود کا حصہ بنا دیا.تین بڑے مذاہب کے پیروکار.. یہودی… عیسائی…. اور مسلمان…. اس بات پر جھگڑتے ہیں کہ ابراہیم ہمارا ہے. سب انکو اپنانا چاہتے ہیں. اپنے دین میں داخل دکھانا چاہتے ہیں جن کو ان کے گھر والوں نے نکال دیا تھا. جن کی وہ لوگ عزت نہیں  کرتے تھے..

ان کے لئے لسان الصدق بنائی-سچی زبان-سچی تعریف-سچی نیک نامی  …. جو رہتی دنیا تک اور اس کے بعد بھی قائم رہے گی. مگر ہم, ہم کتنے بھلکڑ لوگ ہیں.. ہم سمجھتے  ہیں لوگ ہمیں بے عزت کرینگے تو ہماری عزت اور نیک نامی چلی جائیگی… لوگ ہمارے بارے میں باتیں کرینگے تو ہم رسوا ہو جائینگے… کبھی سر نہیں اٹھا سکیں گے.. لوگوں کا کام تو ہوتا ہے باتیں کرنا… کسی انسان کی عزت لوگوں کی زبانوں سے بندھی نہیں ہوتی… وہ زبان کھولیں گے اور عزت گر جائیگی…

 صرف اور صرف اس رب کے ہاتھ میں ہے ہر انسان کی عزت…وہ نہ چاہے تو کوئی رسوا نہیں ہوسکتا.. انسان بری نیت نہ رکھے تو وہ رب کبھی رسوا نہیں کرتا… کسی کی عزت کسی انسان کے ہاتھ میں نہیں ہے… ہمارا سارا خاندان ہماری بے عزتی کریگا تو وہ ربِ برتر اس سے کہیں زیادہ لوگ پیدا کردےگا جو ہماری عزت کرینگے…اگر ہم نے اپنے گناہوں کی معافی مانگ لی ہے. ہماری نیت درست ہے تو خدا ہمیں کسی انسان کے ہاتھوں رسوانہیں کرے گا…

اسلیے ان بتوں سے ڈرنا نہیں چاہیے. کلھاڑا مار کے ان کو توڑ دینا چاہیے. کوئی ہمارے گھر کی طرف آنکھ اٹھا کر دیکھے تو اس کی آنکھ پھوڑ دینی چاہیے.  بس کسی کا نقصان کرنے میں پہل نہ کرو. دنیا کے سارے بدکردار مرد اکھٹے ہوجائیں وہ تب بھی تائب ہوئی لڑکی کو رسوا نہیں کر سکتے.. یہ ہوتی ہے توبہ اور اچھی نیت…پھر اب تیر مارنا پڑے یا کلھاڑا… خدا گواہ ہوگا کہ میری نیت بری نہیں تھی

Advertisements

4 Replies to “کہ اب مجھے شوقِ کمال نہیں , خوفِ زوال نہی”

      1. “Saahib e Haal” usay kehtay hein jo haal mein zinda ho, aur khush ho.. Usay ne past ka gham ho (depression, pessimism), aur na future ka khouf (apprehensions)…

        “Alhamdolillah e Alaa kull e haal” bhi HAR HAAL mein Allah ka shukr karnay ka naam hai…

        Momineen ki aik quality hai, jo roz e qiyaamat se related Quran mein aayi hai… Unkay baaray mein Quran kay alfaaz hein: “na unhain khouf hoga, aur na huzn (gham) hoga…..” [Al Baqarah: 114] .. Ye aur bhi kaee jagah aaya hai Quran mein..

        Allah kay khaas banday duniya mein bhi khouf o gham se azaad rehtay hein. Khush rehtay hein, Khush rakhtay hein.

        Wo loag bohat valuable hein, jin kay lafz doosron ko housla detay hein. Nimra jaisay writers inhi logon mein hein…

        Liked by 1 person

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s