اوکھے لوگ ؎

کسی کی نہ سننا اور کسی کو خاطر میں نہ لانا، عمومی روش سے ہٹ کر چلنا، رسموں رواجوں کو نظر انداز کر دینا، آخرت کی فکر میں دنیا کا نقصان کرتے چلے جانا، جس کو دنیا نا گزیر سمجھے اسی کو حقیر سمجھنا، بہاؤ کے مخالف چلنا اور تندئ باد مخالف میں بھی اونچا اڑنے کی کوشش کرتے رہنا، اخروی فائدے کی امید میں موجودہ نقصان کو ٹکھرا دینا، نازک مزاج شاہوں کی شکن آلود جبینوں کی پروا نہ کرنا، لوگوں کی کڑواہٹ کا احساس کیے بغیر سچ بولتے چلے جانا، زمانہ قیامت کی چال چل رہا ہو تو خود قیامت برپا کیے رہنا، بچ بچ کر جینے کے بجائے بڑھ بڑھ کر مرنے کی تمنا کرنا، گرے ہوؤں کو اٹھانا اور اکڑ کر چلنے والوں کے گریبان پر ہاتھ ڈالنا، ہاتھ خالی ہوں تب بھی کچھ نہ کچھ لٹاتے رہنا، 

یہ مشکل پسند طبعیتوں والے اوکھے لوگ کتابوں میں تو ملتے ہیں حقیقت میں نہیں

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s